Whatsapp image 2020 04 03 at 4.11.15 pm

صاحبزادہ ڈاکٹر انوار احمد بُگوی


مضامین

صحت کی تعریف عالمی ادارہ صحت کے مطابق اس طرح ہے:"ایک مکمل جسمانی،ذہنی،نفسیاتی اورسماجی (Well Being)تسلی بخش حالت جومحض بیماری اورمعذروی(Infirmity)سے نجات تک محدود نہ ہو"۔1948)ع)  مختلف طبقوں اورعلاقوں کے انسانوں کے لئے معیارصحت میں کوئی فرق نہیں ...


برصغیر پاک وہند میں مسلمان کی تعلیم وتربیت کا موجودہ نظام شاہ ولی اللہ دہلوی کی خاندانی درس گا ہ ،مدرسہ رحیمیہ کامعنوی اورنصابی تسلسل ہے۔خود یہ مدرسہ درس نظامی کاحصہ ہے جو کئی صدیوں سے ہمارے مدارس عربیہ میں رائج ہے۔ دارالعلو م دیوبند1866ع سے اور ا...


نوٹ: ہرصاحب علم کے فضل وکمال میں اُس کے اساتذہ کا گہرااثرہوتاہے۔مولاناامین احسن اصلاحی نے قرآن کوسمجھنے میں جس قدر محنت اور عرق ریزی کی ہے اور جتنے معارف وحکم اس میں تلاش کئے ہیں اُن میں اُن کے اُستاد مولانا حمیدالدینؒ فراہی کابہت بڑاحصہ ہے۔اسی طر...


سفر نامہ قسط ۔سوم بحر ہند کے ایک جزیرے میں صاحبزادہ انوار احمد بگوی شہر کی سڑکیں سڑکیں صاف اور عام طور پر کھلی ہیں۔ صبح اور شام ان پر جہاں پبلک ٹرانسپورٹ اور رکشا کا رش ہوتا ہے فٹ پاتھوں پر آنے جا نے والوں کا بھی بہت ہجوم ہوتا ہے۔ ان میں زیادہ...


مسلم ممالک میں سے ہندوستانی اور پاکستانی مسلمانوں کو جس سرزمین سے تاریخی محبت ہے وہ ترکی ہے۔سعودی عرب میں حرمین سے عقیدت ایک دوسرا معاملہ ہے۔ترکی کے ساتھ تعلق کی بنیادیں آج سے نہیں بلکہ صدیوں کی تاریخ میں چھپی ہوئی ہیں۔بنواُمیہ کے بعد یہ دوسری ممل...


    شاہراہ ریشم کانقشہ دیکھیں ، چنگیز خان اور ہلاکوخان کی تباہ کاریوں کا اندازہ لگائیں ۔ امیرتیمور کی وسیع فتوحات کاتصور کریں۔ امام بخاریؒ ،خواجہ نقشبندؒ اورملا نصیرالدین کو یاد کریں۔تاریخ کے اوراق میں سمرقند، تاشقند، بخارا، خیوا اورخوارزم کے نام ...


حضرت امام: تاشقند میں آج ہماری منزل چوک حضرت امام تھی۔یہ اصل میں ایک چوک ہے جس کے اندر اوراس کے اردگرد بہت سارے آثار واقع ہیں۔عمارت شہر کے اہم آثار میں سے ہے۔ٹیکسی نے سڑک پراتارا وہاں سے سیڑھیاں چڑھے توسامنے مسجد کے دواونچے مینارنظر آئے۔ مینار خو...


    لب حوض کے نزدیک ایک دو منزلہ نئی عمارت دیکھی جس پر ازبک میں لکھاتھا: 1-Son OILAVIY POLIKLINIKA ایک طرف تحریر تھاIJTIMOIY DORIXONAیعنی پبلک دوائی خانہ یعنی فارمیسی،صاف ستھری عمارت،فرنٹ بہت خوبصورت، دروازے کے اندر ایک طرف ہسپتال کی فارمیسی تھی...


    مزارکے نزدیک ایک چھوٹا سا چبوترہ ہے جس کے چار در اور چار ستونوں پرپر چار چھوٹے چھوٹے نیلے گنبد ہیں۔ دروں کے اوپر نیلی ٹائیلز اورپھول بنے ہوئے ہیں۔اس تعمیر میں چھت کے نیچے زمین سے بلندفرش پرایک گڑھا ہے اور گڑھے میں پتھر میں تراشیدہ بڑاساپیالہ ہ...


گورِ امیر (امیر تیمور کامقبرہ): دنیا کی تاریخ میں بالعموم اور مسلمانوں کی تاریخ میں بالخصوص امیر تیمور (م: 1405 ع(ایک بڑا معتبرنام ہے۔ چودھویں صدی کی آباد دنیا کے بیشتر تہذیبی اورعلمی مراکز تیمور کے ہاتھوں تباہ وبرباد ہوئے۔پہلوں کے مقابلے میں بڑا...