کہانی و افسانہ


مضامین

            ماہا نے گھر میں آفت مچا رکھی تھی ۔ موصوفہ پر ماڈلنگ کا بھوت سوار تھا ۔ ویسے وہ تھی بہت پیاری ! بلند قامت، گوری رنگت ، بڑی بڑی آنکھیں ، نازک اندام اور اٹھارہ بیس سال عمر ، ماڈلنگ کے لیے اور بھلا کیا چاہیے؟ مگر اس کے دل میں شاید یہ خیال ...


            نواز صاحب ریٹائرڈ ہیڈ ماسٹر تھے۔ ان کے پڑوسیوں کا خیال تھا کہ وہ ایک گزرے عہد، پٹی ہوئی قدروں ، لگے لپٹے رسم و رواج، پرانی وضع کے کپڑے، پچھلی پود کا رہن سہن اور ایک صدی پہلے کی سوچ کا ہونق سا ملغوبہ ہیں۔ نواز صاحب کی ساری زندگی طالب عل...


            باقر نواب کی خاندانی حویلی جہاں تابناک ماضی کی غماز تھی وہیں شہر کے پرانے علاقے کی واضح علامت بھی بن چکی تھی ۔ اس کا نام ‘‘ عشرت محل’’ رکھا گیا تھا مگر عرف عام میں وہ ‘‘ نواب صاحب کی حویلی ’’ سے معروف تھی ۔ برسوں سے موسموں کی مار جھیلن...


            ‘‘ ارے بیگم ! اعلی تعلیم یافتہ اور میٹرک پاس بیوی میں بہت فرق ہے …… فرق صرف شکل و صورت کا نہیں بلکہ عادات، رہن سہن ، اٹھنے بیٹھنے ، سوچ اور بچوں کی تربیت ، ہر بات میں ہوتا ہے ۔ دو چیزیں اگر اچھی ہوں تو مرد کی زندگی بہت آرام سے گزر سکتی...


            ‘‘میں نے بابا جی کوٹیکہ دے دیا ہے۔ یہ دوا بھی لکھ دی ہے۔ اِسی ترتیب سے دیتے رہیں۔ لگتا ہے کہ رات کو دوا نہیں دی گئی’’ حاکم علی کی بہو کو سمجھاتے ہوئے میں نے کہا۔اُس نے جواب دیا کہ ‘‘ڈاکڑ صاحب ایسی کوئی بات نہیں کہ رات دوا نہیں دی گئی ،...